اردو کی برقی کتابیں

صفحہ اول کتاب کا نمونہ پڑھیں


شام، شفق، تنہائی

خالد علیم

ڈاؤن لوڈ کریں 

   ورڈ فائل                                                                          ٹیکسٹ فائل

غزلیں

اک انتخاب وہ یادوں کے ماہ و سال کا تھا
جو حرف ابر زدہ آنکھ میں ملال کا تھا
شکست آئنۂ جاں پہ سنگ زن رہنا
ہنر اسی کا تھا، جتنا بھی تھا، کمال کا تھا
یہ دیکھنا ہے کہ کھل کر بھی بادباں نہ کھلے
تو اس سے کتنا تعلق ہوا کی چال کا تھا
قبائے زخم کی بخیہ گری سے کیا ہوتا
مرے لہو میں تسلسل ترے خیال کا تھا
پرانے زخم بھی خالد! مرے، ادھیڑ گیا
جو ایک زخم، کف جاں پہ پچھلے سال کا تھا

***
دامن چاک ہی اے ہم نفساں ایسا تھا
رات ایسی تھی کہاں، چاند کہاں ایسا تھا
ہم ہواؤں کو لیے پھرتے تھے زنجیر بکف
رات اس دشت کی وحشت پہ گماں ایسا تھا
دل کہاں بوجھ اٹھاتا شب تنہائی کا
یہ ترا قرب جدائی مری جاں ایسا تھا
قدم اٹھتا ہی نہ تھا گو کہ زمیں پاؤں میں تھی
آسماں بھی تو مرے سر پہ گراں ایسا تھا
رہ گئے کٹ کے ترے ہجر کے گرداب میں ہم
ورنہ یہ زور سمندر میں کہاں ایسا تھا

***

ٹوٹ کر جو کف مژگاں پہ بکھر جاتا ہے
وہ تعلق تو رگ جاں میں اتر جاتا ہے
ریزہ ریزہ جو کیا خود کو، چلو ہم نے کیا
ورنہ الزام تو یہ بھی ترے سر جاتا ہے
اے مرے عکس فراموش ذرا سوچ کہ کیوں
آئنہ دیکھ کے صورت تری ڈر جاتا ہے
اس سے کس بات کا شکوہ، وہ مرے پاس کبھی
آ تو جاتا ہے، مری آنکھ تو بھر جاتا ہے
چھوڑ جاتا ہے مرا جسم، مری جاں لے کر
جاتے جاتے وہ کوئی کام تو کر جاتا ہے
وہ کہ آتا تھا بچھڑنے کو مگر اب خالد
مجھ کو مجھ سے ہی جدا کرکے گزر جاتا ہے

*****

ڈاؤن لوڈ کریں 

   ورڈ فائل                                                                          ٹیکسٹ فائل

پڑھنے میں مشکل؟؟؟

یہاں تشریف لائیں۔ اب صفحات کا طے شدہ فانٹ۔

   انسٹال کرنے کی امداد اور برقی کتابوں میں استعمال شدہ فانٹس کی معلومات یہاں ہے۔

صفحہ اول