اردو کی برقی کتابیں

صفحہ اولکتاب کا نمونہ پڑھیں


آوٹرم لین

نیلوفر


ڈاؤن لوڈ کریں 

   ورڈ فائل                                                         ٹیکسٹ فائل

اقتباس


دوسرے دن صبح آٹھ بجے ویریندر کوچنگ انسٹی ٹیوٹ پہنچا تو ڈائرکٹر صاحب آ چکے تھے۔ اس نے ریسپشن پر جا کر ان سے ملنے کی پر میشن لی اور ان کے کیبن میں داخل ہو گیا۔

ڈائرکٹر——ہاں بتایئے۔

ویریندر—— سرمیں ذرا کلاسس اور فیس وغیرہ کے بارے میں جانکاری چاہتا ہوں۔

ڈائرکٹر ——(پوری توجہ اور پیارسے) آپ کو داخلہ کس کس کلاس میں چاہیے؟ مطلب آپ صرف اختیاری مضمون پڑھنا چاہتے ہیں یاG.S.میں بھی گائڈنس کی ضرورت ہے۔

ویریندر—— میں دونوں میں ہی داخلہ چاہتا ہوں۔ دراصل میں ابھی ابھی آیا ہوں اور چاہتا ہوں کہ Competitionکی ٹریک کو ایک بار اچھی طرح پکڑ لوں۔ آپ کی رائے میں کیا مناسب رہے گا۔

ڈائرکٹر —— اگر آپ اپنی تیاری میں ایک فکس ٹریک اپنائیں گے تو امتحان پاس کرنا زیادہ آسان ہو گا۔ ہمارے یہاں کوچنگ کے نتیجے بہت اچھے آتے ہیں اور بہت سے Studentایسے بھی Qualify کرتے ہیں جنہوں نے ابھی پہلی بار ہی Joinکیا ہے۔ یہ سب مناسب وسٹیک ٹریک کا ہی ایک گیم ہے۔ اگر آپ نے اپنے پلان کو پوری مستعدی اور لگن سے جاری رکھا تو آپ کے لیے اس امتحان کو نکالنا قدرے آسان ہو جائے گا۔ لیکن اگر آپ نے مناسب ٹریک پکڑے بنا ہی پڑھائی شروع کی تو آپ ودّوان بھلے ہی بن جائیں مگر Beurocrateبالکل نہیں بن سکتے۔

آپ کوئی ریسرچ اسکالر تو بننے آئے نہیں ہیں۔ آپ کو صرف اپنی ضرورت بھر ہی کتابوں کی اسٹڈی کرنی ہے جتنے میں آپ امتحان کے سوالات حل کرسکیں۔

ویریندر۔ سر میں چاہتا ہوں کہ آپ کی پوری گائڈنس لوں ( تھوڑا سا رک کر) اور فیس وغیرہ کس طرح جمع کرنا ہے۔

ڈائرکٹر —— دیکھئے ویریندر صاحب ہم کوئی پروفیشنل تو ہیں نہیں کہ ہم اپنے فائدے پر نظر رکھیں۔ ہمارا مقصد صرف Studentکی زیادہ سے زیادہ بھلائی کرنا اور انھیں افسر بننے میں پوری مدد کرنا ہے۔ کیونکہ ہم جانتے ہیں کہ آپ کے سامنے ابھی پوری زندگی ہے۔ آج اگر ایک بھی دن آپ کا ضائع ہوا تو آگے مشکل ہو جائے گی۔ ہم آپ کے پیسے اور وقت دونوں کی فکر کرتے ہیں۔

ویریندر—— سر اگر با لکل صحیح حکمت عملی اختیار کروں تو زیادہ سے زیادہ کتنے وقت میں اس امتحان کو پاس کر سکتا ہوں۔

ڈائرکٹر—— صرف ایک سال چاہئے اس امتحان کی تیاری پر کمانڈ حاصل کرنے کے لیے۔لیکن اس کے لیے Studentکا بیک گراؤنڈ بھی دیکھنا پڑتا ہے کیونکہ اگر مضمون کیStudyپہلے سے نہیں ہے تو بہت ذہین طلباء کو بھی دوسرے مرحلے تک انتظار کرنا پڑسکتا ہے۔ لیکن ہم یہ بالکل نہیں چاہتے کہ Mis-guided کنڈیڈیٹس کی طرح جو بہت محنت بھی کرتے ہیں اور ذہین بھی ہوتے ہیں لیکن تیسری اور چوتھی کوشش کے بارے میں سوچتے ہیں۔ اس طرح ہمارے students سوچیں۔ ورنہ یہاں ہمیں یہ دیکھ کر بہت افسوس ہوتا ہے کہ بہت سے Studentصرف اچھی گائڈنس کی کمی کی وجہ سے اس میں تین تین چار چار سال گنوا دیتے ہیں۔ (ریسٹ چیر پر سیدھے بیٹھتے ہوئے) مجھے آپ ذرا یہ بتایئے کہ آپ کا بیک گراونڈ کیا ہے؟

ویریندر—— سر میں نے فلسفہ اور انگریزی لڑیچر سے بی اے کیا ہے لیکن میں نے اپنے سنیئروں سے سنا ہے کہ تاریخ کے ساتھ پہلے دور کا امتحان پاس کرنا ذرا آسان ہوتا ہے۔ اس لیے پہلے دور کے امتحان کے لیے میں نے تاریخ کے موضوع کا انتخاب کیا ہے۔

ڈائرکٹر——بالکل ٹھیک۔کیا پڑھنا ہے اسے جاننے سے سے پہلے یہ جاننا زیادہ ضروری ہے کہ کیا نہیں پڑھنا ہے۔ صحیح کتابوں کا انتخاب اور صحیح گائڈنس اس امتحان کے لئے اشد ضروری ہے کیونکہ کتابوں کا بازار طلباء کو گمراہ کر دیتا ہے۔ اسی لئے ہم دن رات ایک کر اپنے بچوں کی خاطر محنت کرتے ہیں۔ کوئی بھی مضمون بڑا یا چھوٹا، آسان یا مشکل نہیں ہوتا۔ دیکھنا صرف یہ ہوتا ہے کہ آپ کی ان مضامین پر گرفت کتنی اچھی ہے۔ محنت سبھی میں کرنی ہو گی جس میں ہم دن رات آپ کی مدد کریں گے کیونکہ صحیح ٹریک پر لے جانے کی ذمے داری ہماری ہے (مشفقانہ توجہ کے ساتھ) اس میں کبھی کوئی کمی نہیں آئے گی۔ آپ کسی بھی وقت Institute آ کر یا فون سے بھی مجھ سے مشورہ کر سکتے ہیں۔ کسی بھی موضوع پر ڈسکشن کر سکتے ہیں۔ By the way آپ کے پاپا کیا کرتے ہیں ؟

(ویریندر آمدنی کے بارے میں صحیح جانکاری نہیں دینا چاہتا ہے) یہ سوچ کر کچھ رکتے ہوئے بولا—— میرے پاپا کسان ہیں۔

ڈائرکٹر—— اچھا—— آپ کی پڑھائی کا خرچہ کیسے دیں گے؟

ویریندر—— کھیتی ہے اور اسی سے دیں گے۔

ڈائرکٹر۔ فیس کی تفصیل آپ کو مل گئی ہے؟

ویریندر۔ جی سر۔

(ذرا جھجکتے ہوئے ویریندر نے اپنی بات رکھی)

ویریندر۔ سر، ریسپشن سے پتہ چلا ہے کہ آپ کی کوچنگ میں کچھ رعائتی آفر بھی ہیں۔

ڈائرکٹر—— یس۔ دیکھئے—— ویسے تو ہم پہلے ہی بچوں سے زیادہ پیسے نہیں لیتے۔ اس مارکیٹ میں سب سے زیادہ رعایت پر کلاس صرف ہمارے ہی یہاں ہوتی ہے۔ لیکن اگر کوئی ایسی بات ہے تو ہم بعد میں اس پر بات کر لیں گے۔آپ یہ بتائیے کہ آپ کتنی قسطوں میں فیس جمع کر سکتے ہیں۔

ویریندر—— سر۔ ایک دو دن میں آپ کو بتا دونگا۔

ڈائرکٹر صاحب——ٹھیک ہے۔ It's OK. Go ahead.

ڈائرکٹر صاحب نے کال بیل کی گھنٹی بجا دی۔

٭٭٭

                                                                                 ٭٭٭

ڈاؤن لوڈ کریں 

   ورڈ فائل                                                         ٹیکسٹ فائل

پڑھنے میں مشکل؟؟؟

یہاں تشریف لائیں۔ اب صفحات کا طے شدہ فانٹ۔

   انسٹال کرنے کی امداد اور برقی کتابوں میں استعمال شدہ فانٹس کی معلومات یہاں ہے۔

صفحہ اول